Boye Me Pa Ke Mein Chalta Sun-hwa Me Khanaay Ko

بوئے مے پا کے میں چلتا ہوا مے خانے کو

بوئے مے پا کے میں چلتا ہوا مے خانے کو

اک پری تھی کہ لگا لے گئی دیوانے کو

میرے ساقی سا کہاں کوئی پلانے والا

آنکھیں کہتی ہیں لٹا دیجئے مے خانے کو

سختیٔ عشق اٹھانے کا زمانہ نہ رہا

اب تو ہے پھول بھی پتھر ترے دیوانے کو

ہاتھ میں آتے ہی کیا پاؤں نکالے ساقی

آفریں ہے ترے چلتے ہوے پیمانے کو

اس میں اے اہل وطن رائے تمہاری کیا ہے

کہتی ہے وحشت دل گھر سے نکل جانے کو

چل گیا کام یہاں جام چلے یا نہ چلے

بادہ کش لوٹ گئے دیکھ کے مے خانے کو

دل سلگتے رہیں پروا نہیں ہوتی کچھ انہیں

شمع اچھی کہ جلا دیتی ہے پروانے کو

شامل دور ہوں اغیار ستم ہے ساقی

اپنے پیمانے سے بڑھنے دے نہ پیمانے کو

حسن خدمت کا صلہ دیکھیے یوں پاتے ہیں

رخ ملا آئنے کو زلف ملی شانے کو

چال ہے مست نظر مست ادا میں مستی

جیسے آتے ہیں وہ ٹوٹے ہوئے مے خانے کو

ابر میں برق کا رہ رہ کے چمکنا کیسا

یہ بھی اک اس کی ہے شوخی مرے تڑپانے کو

اس میں اے پردہ نشیں پردہ دری کس کی ہے

دیکھنے آتی ہے خلقت ترے دیوانے کو

خوب انصاف ہے اے بادہ کشو کیا کہنا

تم کو تسکین ہو گردش ہو جو پیمانے کو

ہے بڑی چیز لگی دل کی خدا جس کو دے

آگ میں کود پڑا دیکھیے پروانے کو

ہو کے پابند جنوں سب سے رہائی پائی

بیڑیاں لپٹی تھیں لاکھوں ترے دیوانے کو

کھنچ چکی تیغ تو اب ہے یہ رکاوٹ کیسی

آپ تڑپانے کو آئے ہیں کہ ترسانے کو

کوئی ایسی بھی ہے صورت ترے صدقے ساقی

رکھ لوں میں دل میں اٹھا کر ترے مے خانے کو

بت پندار کو توڑو تو ہو دل پاک جلیلؔ

تم خدا خانہ بناؤ اسی بت خانے کو

جلیلؔ مانک پوری

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(641) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of JALEEL MANIKPURI, Boye Me Pa Ke Mein Chalta Sun-hwa Me Khanaay Ko in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 66 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.2 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of JALEEL MANIKPURI.