Udhore Harf Ka Roznamcha

ادھورے حرف کا روزنامچہ

اُسے بلایا گیا

اُسے کچھ دکھانے کے لئے بلایا گیا

اُس کی رہنمائی پر

محبوس پرندوں سے بھرا رنگین پنجرہ

اپنی لاٹھی سے لٹکائے

نیلی شعاعوں کے بخارات سے

اپنے ہونٹوں سے بہتی رال پونچھتے

ہکلاتے ہوئے

ایک کمر خمیدہ ساحر بوڑھے کو

مامور کر دیا گیا

بوڑھا

ہر قدم پر کچھ بڑ بڑاتے ہوئے

ایک پرندہ آزاد کر کے

دوسرے پرندے کو محبوس کر لیتا ہے

پنجرے میں موجود پرندوں کی تعداد میں

کبھی کمی نہیں ہوتی

اُسے آنا ہی تھا

اُس کے راستے میں

سبز و زرد کھیت

موسموں کے حاشیے پر

بعد از مباشرت کی بُو

اور خون کی چپچپاہٹ سمیٹے

بے حسّ و حرکت پڑےتھے

اُن پر لگی ناموں کی تختیاں

اپنے ناموں کے ہجوں سے ناآشنا

اپنے ہونے کا سبب جاننے سے قاصر

اورکسان

ان میں ہل چلانے کے لئے آزاد تھے

کھیتیوں کی رضامندی سے بے نیاز

فصل کے اُگنے نہ اگنے سے لاپرواہ

اسی راستے میں

مردہ کیچووں سے بھرے

مگر مچھلیوں سے خالی

تالابوں کی منڈیروں پر

بنسیاں سنبھال کر بیٹھنے والوں کی

پرچھائیاں ڈول رہی تھیں

اور پانی کی سڑانڈ پر

رات کی رانی کی

خوشبو حاوی تھی

ہر تالاب کے چاروں طرف

راج ہنسوں کے پنجر

کہانی کے اُن کرداروں کی طرح

بکھرے پڑے تھے

جو کسی کہانی کے

ختم ہونے سے پہلے ہی

قتل ہو جاتے ہیں

بوڑھے کے آزاد کردہ پرندے

اُس کے برابر اڑتے چلے جا رہے تھے

اُس کا دم لینا محال تھا

وہ جس شہر تک پہنچا

اُس کی گلیاں شمار کرنے والوں کے لئے

نجانےکیوں

ایک گلی ہمیشہ کم ہو جاتی ہے؟

ریاضی کا کوئی فارمولا

اس کا جواز نہیں دے پاتا

اُسے جس مکان میں اتارا گیا

وہاں بد ہیئت اور مکروہ ہاتھ

چاند اور سورج کے ٹکڑے

زندگی کے ہاون دستے میں

ایک نئی کائینات تشکیل کرنے کے لئے

کوٹ رہے تھے

ہر طرف دھول تھی

اور وقت ہانپ رہا تھا

اُس کے چاروں طرف

پروں کی پھڑ پھڑاہٹ ہے

بند دریچوں کے اجنبی مکان میں

اُس کی آنکھیں

خوف سے دھندلا رہی ہیں

وہ چاروں اطراف سے پرندوں میں گھرا ہے

اور دروازے پر

بوڑھے کی مسکراہٹ کا قفل لگا ہے

اُسے کیا دیکھنے کے لئے بلایا گیا تھا؟

جمیل الرحمان

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(763) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Jameel Ur Rahman, Udhore Harf Ka Roznamcha in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Nazam, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 68 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.3 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Jameel Ur Rahman.