Harf Zadi

حرف زادی

حرف زادی

سنو!اے حرف زادی تم

بھلے مجھ سے نہیں ملنا

اگر قسمت بھی چاہے تو

تمہیں حق ہے تم انکار کر دینا

یہ دنیا ایک رستہ ہے

کہیں چلتے ہوئے رستے میں

ہو سکتا ہے اپناسامنا ممکن

تمہیں حق ہےمیری پہچان مت کرنا

میری صورت جو دیکھو تو

نگاہیں پھیر لینا تم

کہ اپنی ذات کے اوپر

تو حق اپنا ہی ہوتا ہے

تمہیں حق ہے

یہ جو لفظ نگری ہے

تمہاری ہی رعایا ہے

جسے تم نے جہاں پر حکم دیناہے

وہیں وہ لفظ ٹھہرے گا

تم اپنی اس رعایا کوبھلے سے حسنِ فانی کے قصیدے حفظ کرواؤ

سنو اے حرف زادی تم

تمہارا حق نہیں بنتا

کہ جو آفاقی جذبہ ہے

اسے تشبیہ دے ڈالو تم اپنی خود فریبی سے

کہ اپنی بد گمانی کی بھڑکتی آگ سے تم اس

حقیقت سی محبت کو جلانے کی کرو کوشش

حقیقت بھی وہ جس کے روپ میں اللہ دکھتا ہے

مجھے تم میرے سر سے لیکر پاؤں تک

تمہیں حق ہےکہ جھٹلا دو

سلگتی بے یقینی کےیہ چنگاری سے لہجے سے

میرے اس جسدِ خاکی کو بھلے تم خاک کر ڈالو

مگر میری آنکھوں کے پسِ پردہ

تم اپنی اس محبت کو کبھی نہ نوچ پاؤ گے

جو مجھ کو میرے اللہ نے ودیعت تب ہی کر دی تھی

کہ جب اس جسدِ خاکی کا

نہ دنیا میں نشاں تھا۔۔۔۔۔۔۔۔

جمیل قمر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(316) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Jamil Qamar, Harf Zadi in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Nazam, and the type of this Nazam is Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 68 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.5 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Jamil Qamar.