Chalo Bad Bahari Ja Rahi Hai

چلو باد بہاری جا رہی ہے

چلو باد بہاری جا رہی ہے

پیا جی کی سواری جا رہی ہے

شمال جاودان سبز جاں سے

تمنا کی عماری جا رہی ہے

فغاں اے دشمن دار دل و جاں

مری حالت سدھاری جا رہی ہے

جو ان روزوں مرا غم ہے وہ یہ ہے

کہ غم سے بردباری جا رہی ہے

ہے سینے میں عجب اک حشر برپا

کہ دل سے بے قراری جا رہی ہے

میں پیہم ہار کر یہ سوچتا ہوں

وہ کیا شے ہے جو ہاری جا رہی ہے

دل اس کے رو بہ رو ہے اور گم صم

کوئی عرضی گزاری جا رہی ہے

وہ سید بچہ ہو اور شیخ کے ساتھ

میاں عزت ہماری جا رہی ہے

ہے برپا ہر گلی میں شور نغمہ

مری فریاد ماری جا رہی ہے

وہ یاد اب ہو رہی ہے دل سے رخصت

میاں پیاروں کی پیاری جا رہی ہے

دریغا تیری نزدیکی میاں جان

تری دوری پہ واری جا رہی ہے

بہت بد حال ہیں بستی ترے لوگ

تو پھر تو کیوں سنواری جا رہی ہے

تری مرہم نگاہی اے مسیحا

خراش دل پہ واری رہی ہے

خرابے میں عجب تھا شور برپا

دلوں سے انتظاری جا رہی ہے

جون ایلیا

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(4378) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Jaun Elia, Chalo Bad Bahari Ja Rahi Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 195 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.2 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Jaun Elia.