Dil Ne Kya Hai Qasad Safar Ghar Samait Lo

دل نے کیا ہے قصد سفر گھر سمیٹ لو

دل نے کیا ہے قصد سفر گھر سمیٹ لو

جانا ہے اس دیار سے منظر سمیٹ لو

آزادگی میں شرط بھی ہے احتیاط کی

پرواز کا ہے اذن مگر پر سمیٹ لو

حملہ ہے چار سو در و دیوار شہر کا

سب جنگلوں کو شہر کے اندر سمیٹ لو

بکھرا ہوا ہوں صرصر شام فراق سے

اب آ بھی جاؤ اور مجھے آ کر سمیٹ لو

رکھتا نہیں ہے کوئی نگفتہ کا یاں حساب

جو کچھ ہے دل میں اس کو لبوں پر سمیٹ لو

جون ایلیا

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1532) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Jaun Elia, Dil Ne Kya Hai Qasad Safar Ghar Samait Lo in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 195 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Jaun Elia.