Sir Sehra Habab Baiche Hain

سر صحرا حباب بیچے ہیں

سر صحرا حباب بیچے ہیں

لب دریا سراب بیچے ہیں

اور تو کیا تھا بیچنے کے لئے

اپنی آنکھوں کے خواب بیچے ہیں

خود سوال ان لبوں سے کر کے میاں

خود ہی ان کے جواب بیچے ہیں

زلف کوچوں میں شانہ کش نے ترے

کتنے ہی پیچ و تاب بیچے ہیں

شہر میں ہم خراب حالوں نے

حال اپنے خراب بیچے ہیں

جان من تیری بے نقابی نے

آج کتنے نقاب بیچے ہیں

میری فریاد نے سکوت کے ساتھ

اپنے لب کے عذاب بیچے ہیں

جون ایلیا

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(830) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Jaun Elia, Sir Sehra Habab Baiche Hain in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 195 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.8 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Jaun Elia.