Yaado Ka Hisaab Rakh Raha Hon

یادوں کا حساب رکھ رہا ہوں

یادوں کا حساب رکھ رہا ہوں

سینے میں عذاب رکھ رہا ہوں

تم کچھ کہے جاؤ کیا کہوں میں

بس دل میں جواب رکھ رہا ہوں

دامن میں کیے ہیں جمع گرداب

جیبوں میں حباب رکھ رہا ہوں

آئے گا وہ نخوتی سو میں بھی

کمرے کو خراب رکھ رہا ہوں

تم پر میں صحیفہ ہائے کہنہ

اک تازہ کتاب رکھ رہا ہوں

جون ایلیا

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1705) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Jaun Elia, Yaado Ka Hisaab Rakh Raha Hon in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 195 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 5 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Jaun Elia.