Hota Hai Mitne Hi Key Liye Har Laga Hua

ہوتا ہے مٹنے ہی کے لیے ہر لگا ہوا

ہوتا ہے مٹنے ہی کے لیے ہر لگا ہوا

لیکن وہ ایک داغ نہ لگ کر لگا ہوا

دل بیٹھ بیٹھ جاتا ہے آئینہ دیکھ کر

جانے یہ کیسا روگ ہے بھیتر لگا ہوا

ایسے ہی بات بات پہ روتا نہیں ہوں میں

اِک زخم ہے کہیں مرے اندر لگا ہوا

اندر بچھا ہوا ہے کوئی جال اور ہی

دام اور ہے دکان کے باہر لگا ہوا

ڈرتا بھی ہوں کہ ہو ہی نہ جائے کہیں وہ کام

اِک عمر سے ہوں جس میں برابر لگا ہوا

ہوتا نہیں جوان لڑکپن کے بعد بھی

لگتا نہیں غریب کا نمبر لگا ہوا

وہ اتفاق سے مرا محبوب ہے تو کیا

جچتا ہے ایک شخص ہی افسر لگا ہوا

جواد زندگی کی طرح تھی کوئی سڑک

دونوں طرف قطار میں کیکر لگا ہوا

جواد شیخ

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(981) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Jawad Sheikh, Hota Hai Mitne Hi Key Liye Har Laga Hua in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Bewafa, Heart Broken Urdu Poetry. Also there are 43 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.3 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Bewafa, Heart Broken poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Jawad Sheikh.