Nah Chair Shaer Rubab Rangin Yeh Bazm Abhi Nuqta Daan Nahi Hai

نہ چھیڑ شاعر رباب رنگیں یہ بزم ابھی نکتہ داں نہیں ہے

نہ چھیڑ شاعر رباب رنگیں یہ بزم ابھی نکتہ داں نہیں ہے

تری نواسنجیوں کے شایاں فضائے ہندوستاں نہیں ہے

تری سماعت نگار فطرت کے لحن کی راز داں نہیں ہے

وگرنہ ذرہ ہے کون ایسا کہ جس کے منہ میں زباں نہیں ہے

اگرچہ پامال ہیں یہ بحریں مگر سخن ہے بلند ہمدم

نہ دل میں لانا گمان پستی مری زمیں آسماں نہیں ہے

ضمیر فطرت میں پر فشاں ہے چمن کی ترتیب نو کا ارماں

خزاں جسے تو سمجھ رہا ہے وہ در حقیقت خزاں نہیں ہے

حریم انوار سرمدی ہے ہر ایک ذرہ بہ رب کعبہ

مرا یہ عینی مشاہدہ ہے فریب وہم و گماں نہیں ہے

ہر ایک کانٹے پہ سرخ کرنیں ہر اک کلی میں چراغ روشن

خیال میں مسکرانے والے ترا تبسم کہاں نہیں ہے

فلک سے ہنگام شعر گوئی صدائیں پیہم یہ آ رہی ہیں

کہ آج اے جوشؔ نکتہ پرور ترا سا جادو بیاں نہیں ہے

جوش ملیح آبادی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1988) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Josh Malihabadi, Nah Chair Shaer Rubab Rangin Yeh Bazm Abhi Nuqta Daan Nahi Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a , and the type of this Nazam is Urdu Poetry. Also there are 51 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.6 out of 5 stars. Read the poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Josh Malihabadi.