Sab Mere Chahne Wale Mere Piyare Nikley

سب مرے چاہنے والے مرے پیارے نکلے

سب مرے چاہنے والے مرے پیارے نکلے

“اے فلک دیکھ زمیں پر بھی ستارے نکلے”

مجھ سے لپٹا ہے شفق رنگ کسی خوباں کا

مرے دل میں بھی وہی نین کرارے نکلے

چھپ کے رہتا ہے مرے دل میں تڑپ کا موسم

میری خواہش بھی نہیں تجھ کو پکارے، نکلے

پھول کیسے کہ گئی جب سے چمن سے چاہت

میں نے شاخوں پہ بھی دیکھا ہے شرارے نکلے

کتنی بے رنگ جفاؤں کے بنا تھی دنیا

دل جو ٹوٹا تو لہو رنگ کے دھارے نکلے

حُسنِ حورانِ تصور جو غزل میں باندھا

بن کے خود کش بھی کئی درد کے مارے نکلے

مجھ کو چھوڑا ہی نہیں اور کے قابل اخترؔ

بل جو مجھ میں تھے اِسی عشق میں سارے نکلے

جنید اختر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(603) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Junaid Akhter, Sab Mere Chahne Wale Mere Piyare Nikley in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 41 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.9 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Junaid Akhter.