Yeh Darhhyan Yeh Talak Daharian Nahi Chalty

یہ داڑھیاں یہ تلک دھاریاں نہیں چلتیں

یہ داڑھیاں یہ تلک دھاریاں نہیں چلتیں

ہمارے عہد میں مکاریاں نہیں چلتیں

قبیلے والوں کے دل جوڑئیے مرے سردار

سروں کو کاٹ کے سرداریاں نہیں چلتیں

برا نہ مان اگر یار کچھ برا کہہ دے

دلوں کے کھیل میں خودداریاں نہیں چلتیں

چھلک چھلک پڑیں آنکھوں کی گاگریں اکثر

سنبھل سنبھل کے یہ پنہاریاں نہیں چلتیں

جناب کیفؔ یہ دلی ہے میرؔ و غالبؔ کی

یہاں کسی کی طرف داریاں نہیں چلتیں

کیف بھوپالی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(545) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Kaif Bhopali, Yeh Darhhyan Yeh Talak Daharian Nahi Chalty in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 52 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.7 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Kaif Bhopali.