Hai Inhen Do Naamon Se Har Aik Afsaanay Ka Naam

ہے انہیں دو ناموں سے ہر ایک افسانے کا نام

ہے انہیں دو ناموں سے ہر ایک افسانے کا نام

ایک تیرا نام ہے اک تیرے دیوانے کا نام

تجھ سے روشن ہے چراغ محفل دار و رسن

مجھ سے بھی اس دور میں زندہ ہے پروانے کا نام

تیری زلف و چشم و لب کا نام ہے میری غزل

تیرا انداز سخن میرے غزل گانے کا نام

چل اسی انداز سے ہاں چل اسی انداز سے

شوخیٔ باد صبا ہے تیرے اٹھلانے کا نام

موج خوشبوئے غزل بے رنگیٔ روئے غزل

اک ترے آنے کا ہے نام اک ترے جانے کا نام

زندۂ جاوید میری شاعری نے کر دیا

نام تیرے گیسوؤں کا اور مرے شانے کا نام

پھول توڑے کوئی پتھر ہم کو مارا جائے ہے

تو نے اتنا کر دیا بدنام دیوانے کا نام

ہم ہیں عاجزؔ آبروئے بزم یاران غزل

اب اسی آئینے سے ہے آئنہ خانے کا نام

کلیم عاجز

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(450) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Kaleem Aajiz, Hai Inhen Do Naamon Se Har Aik Afsaanay Ka Naam in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 79 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.5 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Kaleem Aajiz.