Pehla Pathhar

پہلا پتھر

تجھ کو شاید یاد تو ہوگا؟

تو نے یوں ہی چلتے چلتے، جھیل میں اِک پتھر پھینکا تھا

سطحِ آب پہ کچھ لہروں نے انجانے سے رسمُ الخط میں،

اِک تحریر لکھی تھی

اور اُس مُبہم مُبہم سی تحریر کو پڑھنے کی کوشش میں

تیرے چہرے پر اِک لمحے کو ہلکا سا رنگ آیا تھا

لیکن کچھ ہی دیر کے بعد،

اُس جھیل کے ٹھہرے ٹھہرے پانی پر کوئی تحریر نہیں تھی

یعنی کوئی لہر نہیں تھی

کتنے ہی برسوں کے بعد، اِک برفیلے سے موسم میں

اُس جھیل میں تو نے دوسرا پتھر پھینکا ہے

پر اب یخ بستہ پانی پر کوئی لہروں کی تحریر نہیں ہے

لیکن تیرے چہرے پر یہ سوچ کی شکنیں سی کیسی ہیں

دوسرا پتھر پھینکنے والے !

جھیل کے سینے میں ترا پہلا پتھر تو محفوظ پڑا ہے

کوثر محمود

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(685) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Kausar Mahmood, Pehla Pathhar in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Nazam, and the type of this Nazam is Love Urdu Poetry. Also there are 46 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.9 out of 5 stars. Read the Love poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Kausar Mahmood.