Atta Ho Mujh Ko Bhi Ab Sheer Main Khayal Naya

عطا ہو مجھ کو بھی اب شعر میں خیال نیا

عطا ہو مجھ کو بھی اب شعر میں خیال نیا

قلم کے سیپ سے موتی کوئ نکال نیا

نئے زمانے کی سرگم نئی ہے ،تال نیا

بنا ہے اب کے یہاں حلقہء دھمال نیا

نہ وہ خُلوص ،نہ ہمدردیاں ،نہ چارہ گری

ہے یوں تو خوب ترا شہرِ بے مثال نیا

مری دعا سے ملیں تجھ کو دو گُنا خوشیاں

ملا ہے پیار نیا اور اس پہ سال نیا۔۔۔!

وہ جس کو سُن کے سماعت جواب دے جائے

نکال لاتا ہے وہ روز اک سوال نیا

خیال و خواب کی دنیا عجیب دنیا تھی

کہ ٹوٹتا تھا جہاں روز اک وبال نیا

کلی کلی پہ نئی آفتیں چمن والو !

بس حال یہ ہے کہ اک دُکھ ہے ڈال ڈال نیا

شب انتظار کی جانے طویل کتنی ہو

لے اک تو بجھ گیا اب تُو دِیا اُجال نیا

ہر ایک شخص کی اب خود سے جنگ ہے اعزاز

کہ آنے والا ہے خوابوں پہ اک زوال نیا

خالد اعزاز

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(425) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Khalid Azaz, Atta Ho Mujh Ko Bhi Ab Sheer Main Khayal Naya in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 25 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 5 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Khalid Azaz.