Chasham E Hiran Main Para Hua Hai

چشمِ حیران میں پڑا ہوا ہے

چشمِ حیران میں پڑا ہوا ہے

ہجر کیوں دھیان میں پڑا ہوا ہے

کوئی نادیدہ اک سفر شاید

راہِ اِمکان میں پڑا ہوا ہے

ہاؤ ہُو کا ہے ایک شور کہ بس

روز و شب کان میں پڑا ہوا ہے

جانے کیوں کر خدا بھی چپ سادھے

روحِ بے جان میں پڑا ہوا ہے

عکس ابلیس کی اُمنگوں کا

قلبِ انسان میں پڑا ہوا ہے

وعدہءشب کا ایک بوجھ اعزاز

صحنِ ویران میں پڑا ہوا ہے

خالد اعزاز

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(371) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Khalid Azaz, Chasham E Hiran Main Para Hua Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 25 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.7 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Khalid Azaz.