Wisaal Mosaam

وصال موسم

وصال موسم

تمہارے ابرو کے اک اشارے کا منتظر ہے

نظر اٹھاؤ

اور اپنے رستے پہ کھلنے والے گلاب دیکھو

سماعتوں سے کہو خموشی

نگاہ اور آئینے کے مابین

سخن کا آغاز کر رہی ہے

ہوا سے پوچھو

وہ کس بدن کی مہک سے پیہم الجھ رہی ہے

سنو یہ موسم وصال کا ہے

سو اس کو یوں رائیگاں نہ جانو

اگر تم اذن سفر نہ دو گے

تو پھر یہ موسم

گلاب رت میں بھی زرد پتوں کا بھیس بدلے

تمہارے آنگن سے جا ملے گا

اور آئنوں سے گلہ کرے گا

خالد معین

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(611) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Khalid Moin, Wisaal Mosaam in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Nazam, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 17 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.4 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Khalid Moin.