Bane Ju Shams O Qamar Nang Asmaan Nikley

بنے جو شمس و قمر ننگ آسماں نکلے

بنے جو شمس و قمر ننگ آسماں نکلے

جنہیں چراغ سمجھتے رہے دھواں نکلے

ذرا سی دیر میں اک رند ہو گیا مومن

یقیں اسے بھی نہ تھا ہم بھی خوش گماں نکلے

نہ ہم میں جوہر غالبؔ نہ ان میں شان ظفرؔ

تو کس قصور میں کوئی قصیدہ خواں نکلے

کسی کی چاہ میں جب جاں بھی ہم گنوا آئے

تو لطف یار کے قصے کہاں کہاں نکلے

میں سوچتا ہوں کہ تاریخ کیا کہے گی ہمیں

سحر بہ دوش چلے شب کے پاسباں نکلے

ہدف ہمیں کو بنانا کہ معتبر ٹھہرو

اس انجمن میں اگر ذکر دوستاں نکلے

جو سنگ میل تھے بے آبرو ہوئے خالدؔ

جو گرد پا بھی نہ تھے میر کارواں نکلے

خالد یوسف

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(674) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Khalid Yousaf, Bane Ju Shams O Qamar Nang Asmaan Nikley in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 13 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.4 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Khalid Yousaf.