Garchey Har Simat Masail K Hain Anbar Buhat, Urdu Ghazal By Khalid Yousaf

Garchey Har Simat Masail K Hain Anbar Buhat is a famous Urdu Ghazal written by a famous poet, Khalid Yousaf. Garchey Har Simat Masail K Hain Anbar Buhat comes under the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope category of Urdu Ghazal. You can read Garchey Har Simat Masail K Hain Anbar Buhat on this page of UrduPoint.

گرچہ ہر سمت مسائل کے ہیں انبار بہت

خالد یوسف

گرچہ ہر سمت مسائل کے ہیں انبار بہت

اپنی تقریر پہ ہے شیخ کو اصرار بہت

ہم نے مانا کہ ترے شہر میں سب اچھا ہے

کوئی عیسیٰ ہو تو مل جائیں گے بیمار بہت

نا سپاسی کا ثمر در بدری ہے یارو

یاد آئے گی یہ ٹوٹی ہوئی دیوار بہت

آج پھر قافلۂ حق کا خدا حافظ ہے

شہر والوں میں نہیں جرأت انکار بہت

ہم جو افرنگ سے ہارے ہیں تو دو باتوں پر

وقت کی قدر نہیں گرمئ گفتار بہت

قصۂ خیر نہ چھپنے کے بہانے لاکھوں

خبر بد پہ اچھلتے ہیں یہ اخبار بہت

بات سننے کے لیے صرف ہوائیں خالدؔ

بات کرنے کے لیے دوست بہت یار بہت

خالد یوسف

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1385) ووٹ وصول ہوئے

You can read Garchey Har Simat Masail K Hain Anbar Buhat written by Khalid Yousaf at UrduPoint. Garchey Har Simat Masail K Hain Anbar Buhat is one of the masterpieces written by Khalid Yousaf. You can also find the complete poetry collection of Khalid Yousaf by clicking on the button 'Read Complete Poetry Collection of Khalid Yousaf' above.

Garchey Har Simat Masail K Hain Anbar Buhat is a widely read Urdu Ghazal. If you like Garchey Har Simat Masail K Hain Anbar Buhat, you will also like to read other famous Urdu Ghazal.

You can also read Love Poetry, If you want to read more poems. We hope you will like the vast collection of poetry at UrduPoint; remember to share it with others.