MENU Open Sub Menu

Khumar Barabankvi Poetry, Khumar Barabankvi Shayari

خماربارہ بنکوی - Khumar Barabankvi

بھوپال

Poetry of Khumar Barabankvi, Urdu Shayari of Khumar Barabankvi

خماربارہ بنکوی کی شاعری

وہی پھر مجھے یاد آنے لگے ہیں

Wohi Phiar Mujhe Yaad Aane Lage Hain

(Khumar Barabankvi) خماربارہ بنکوی

وہ مجھ سے مَیں اس سے جدا ہو گیا

Wo Mujh Se Main Uss Se Juda Ho Giya

(Khumar Barabankvi) خماربارہ بنکوی

وہ جا چکے ہیں وقت کی گردش تمام ہے

Wo Ja Chuke Hain Waqt Ki Gardish Tamam Hai

(Khumar Barabankvi) خماربارہ بنکوی

تصویر بناتا ہوں تصویر نہیں بنتی

Tasveer Banata Hoon Tasveer Nahi Banti

(Khumar Barabankvi) خماربارہ بنکوی

نہ ہارا ہے عشق اور نہ دنیا تھکی ہے

Na Haara Hai Ishq Or Na Duniya Thaki Hai

(Khumar Barabankvi) خماربارہ بنکوی

مجھ کو شکستِ دل کا مزا یاد آ گیا

Mujhe Ko Shikast E Dil Ka Mazza Yaad Aa Giya

(Khumar Barabankvi) خماربارہ بنکوی

جئیں عشق میں آسرا دینے والے

Jabeen E Ishq Main Aasra Dene Wale

(Khumar Barabankvi) خماربارہ بنکوی

ایک شعلہ سا گرا شیشے سے پیمانے میں

Ik Shoola Sa Girra Shehshe Se Peemane Main

(Khumar Barabankvi) خماربارہ بنکوی

اک پل میں اک صدی کا مزا ہم سے پوچھئے

Ik Paal Main Ik Sadi Ka Maza Hum Se Pochiye

(Khumar Barabankvi) خماربارہ بنکوی

حسن جب مہرباں ہو تو کیا کیجیے

Husn Jab Meherbaan Hoo Tu Kiya Kijye

(Khumar Barabankvi) خماربارہ بنکوی

ہم انہیں وہ ہمیں بھلا بیٹھے

Hum Unhain Wo Hamain Bhula Bethe Hain

(Khumar Barabankvi) خماربارہ بنکوی

ہجر کی شب ہے اور اجالا ہے

Hijar Ki Shaab Hai Or Ujala Hai

(Khumar Barabankvi) خماربارہ بنکوی

ہنسنے والے اب ایک کام کریں

Hansane Wale Abb Kaam Kareen

(Khumar Barabankvi) خماربارہ بنکوی

غمِ نہاں کو بھلایا مگر بھلا نہ سکے

Gham E Nihaan Ko Bhulaya Mager Bhula Na Sake

(Khumar Barabankvi) خماربارہ بنکوی

غمِ دنیا نے ہمیں جب کبھی ناشاد کیا

Gham E Duniya Ne Hamain Jab Kabhi Nashaad Kiya

(Khumar Barabankvi) خماربارہ بنکوی

غم چھپانے سے چھپ جائے ایسا نہیں

Gham Chupane Se Chup Jaye Aaisa Nahi

(Khumar Barabankvi) خماربارہ بنکوی

اے موت انہیں بھلائے زمانے گزر گئے

Ee Moot Unhain Bhulaye Zamane Guzar Gaye

(Khumar Barabankvi) خماربارہ بنکوی

دنیا جسے کہتے ہیں ‘ جادو کا کھلونا ہے

Duniya Jisse Kehte Hain Jadu Ka Khilona Hai

(Khumar Barabankvi) خماربارہ بنکوی

دعائیں اپنے مقدر کو دے رہا ہوں مَیں

Duain Apne Muqaddar Ko Dey Raha Hoon Main

(Khumar Barabankvi) خماربارہ بنکوی

ایسا نہیں کہ ان سے محبت نہیں رہی

Aaisa Nahi K Un Se Muhabbat Nahi Rahi

(Khumar Barabankvi) خماربارہ بنکوی

Khumar Barabankvi was born ‎on 20 September 1919 in Barabanki, Uttar Pradesh. His real name was Mohammed Haidar Khan but he wrote under the pen name of Khumar. In childhood he found poetic environment in his family. His father Dr. Ghulam Haider wrote salams and marsiyas under pen name ‘Bahar’. His uncle ‘Qaraar Barabnkvi’ was a well-known poet of Barabanki who guided Khumar in young age. His brother Kazim Haider ‘Nigar’ who died in early age was also a poet. He got his work published as ‘Hadees-e-Deegaraan’, ‘Aatish-e-Tar’ and Raqs-e-Mai’. He died in 1999.

Urdu Poetry & Shayari of Khumar Barabankvi. Read Ghazals, Love Poetry, Sad Poetry, Social Poetry, Friendship Poetry of Khumar Barabankvi, Ghazals, Love Poetry, Sad Poetry, Social Poetry, Friendship Poetry and much more. There is 1 book of the poet published on UrduPoint, including Mix Poetry Collection by Khumar Barabankvi. Read poetry from the books. There are total 20 Urdu Poetry collection of Khumar Barabankvi published online.