مشہور شاعر محمود ناصر ملک کی شاعری ۔ نظمیں اور غزلیں

مجھے خوابوں سے آگے کا نگر بھی خواب لگتا ہے

محمود ناصر ملک

بہے جاتا ہے خوابوں کا جو دریا خواب کے اندر

محمود ناصر ملک

وہ میرے نام پر چونکا بہت ہے

محمود ناصر ملک

رنگ اور خوشبو باتیں کرنے لگتے ہیں

محمود ناصر ملک

تھکن سے چور ہوتے جا رہے ہیں

محمود ناصر ملک

شکست خواب کا کوئی نشاں رہنے نہیں دیں گے

محمود ناصر ملک

تیرے نام کا گھاؤ سچ ہے

محمود ناصر ملک

جہاں بارود پھٹتا ہے، فنا کا رقص کرتا ہے

محمود ناصر ملک

تیری شام کا پہلا تارا مجھ سے تھا

محمود ناصر ملک