Abhi Ruswayion Ka Ik Bara Bazaar Aaye Ga

ابھی رسوائیوں کا اک بڑا بازار آئے گا

ابھی رسوائیوں کا اک بڑا بازار آئے گا

پھر اس کے بعد ہی وہ کوچۂ دل دار آئے گا

وطن کی ایک تصویر خیالی سب بناتے ہیں

خبر لیکن نہیں کیا اس میں کوئے یار آئے گا

گل شاخ محبت پر لہو کا رنگ کھلتا ہے

کہ اب رنگ حنا ذکر لب و رخسار آئے گا

ہمارے واسطے بھی ساعت ہموار ٹھہرے گی

کہ راہ شوق میں جس دم وہ نا ہموار آئے گا

ابھی آب و ہوائے جسم کے اسرار کھلتے ہیں

ابھی وہ توڑنے اس جسم کی دیوار آئے گا

کرو اہل جنوں کچھ تو کرو سامان دل داری

کہ شہر عشق میں وہ شوخ پہلی بار آئے گا

مہتاب حیدر نقوی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(233) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Mahtab Haider Naqvi, Abhi Ruswayion Ka Ik Bara Bazaar Aaye Ga in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 41 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.8 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Mahtab Haider Naqvi.