Muthiyon Mein Rait Bhar Li Hai Batau Kis Terhan

مٹھیوں میں ریت بھر لی ہے بتاؤں کس طرح

مٹھیوں میں ریت بھر لی ہے بتاؤں کس طرح

رات دن آب رواں سے منہ چھپاؤں کس طرح

رقص کرتے ہیں بگولے میرے تیرے درمیاں

ریت پر دریاؤں کا نقشہ بناؤں کس طرح

وہ ادھر اس پار کے منظر بلاتے ہیں مجھے

روشنی کے شہر سے پیچھا چھڑاؤں کس طرح

یاد سب کچھ ہے مگر کچھ بھی نظر آتا نہیں

پتلیوں میں تیرے چہرے کو چھپاؤں کس طرح

جب یہاں اس شہر میں سب کچھ خزاں آثار ہے

بے در و دیوار کا اک گھر بناؤں کس طرح

مہتاب حیدر نقوی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(267) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Mahtab Haider Naqvi, Muthiyon Mein Rait Bhar Li Hai Batau Kis Terhan in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 41 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.5 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Mahtab Haider Naqvi.