Har Lamha Pur Malal Hai Kiss Baat Ki Khushi

ہر لمحہ پُر ملال ہے کس بات کی خوشی

ہر لمحہ پُر ملال ہے کس بات کی خوشی

ہر اک نفس وبال ہے کس بات کی خوشی

جس کو سکوں نے ترک کیا زیر کر دیا

تازہ میری مثال ہے کس بات کی خوشی

دیکھو فلک بھی میرا مخالف ہے ان دنوں

شمس و قمر کی چال ہے کس بات کی خوشی

اپنی شناخت مانگتا ہوں آئنے سے میں

بہکا ہوا سوال ہے کس بات کی خوشی

اٹکا ہوا ہوں خواب کی دہلیز پر خدا

نے ہجر نے وصال ہے کس بات کی خوشی

مجھ کو مرے وجود نے دے ڈالا ہے جواب

ناچیز اب نڈھال ہے کس بات کی خوشی

کیا خاک مستفید ہو پیغام سے ترے

جب رزق کا خیال ہے کس بات کی خوشی

شکوے اگل رہا ہے مرا اس لیے قلم

رگ رگ میں اشتعال ہے کس بات کی خوشی

ماجد جہانگیر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(379) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Majid Jahangir, Har Lamha Pur Malal Hai Kiss Baat Ki Khushi in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 54 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.7 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Majid Jahangir.