Tumhare Lams Se Misra Kasheed Karta Hoon

تمھارے لمس سے مصرع کشید کرتا ہوں

تمھارے لمس سے مصرع کشید کرتا ہوں

خیالِ یار کو ایسے جدید کرتا ہوں

تمھارے عکس سے ہوتی ہے بات روزانہ

میں چاند دیکھتا رہتا ہوں عید کرتا ہوں

مجھے یقین ہے منزل پکار اٹھے گی

سو راہ عشق میں محنت شدید کرتا ہوں

جہاں کے مسئلے کب تک لہو رلائیں گے

خداۓ پاک سے گفت وشنید کرتا ہوں

سیاہ رات سے آنکھیں نہیں چراتا میں

ہر ایک ظلم بنامِ یزید کرتا ہوں

دروں کی آگ نکلتی ہے لفظ کی صورت

سخن تراش کے مصرع رسید کرتا ہوں

یہ خود کلامی اذیت کی مات ہے ماجد

میں خود سے اس لیے باتیں مزید کرتا ہوں

ماجد جہانگیر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(317) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Majid Jahangir, Tumhare Lams Se Misra Kasheed Karta Hoon in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 54 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.4 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Majid Jahangir.