Deeda O Dil Ki Fiza Par Gham Ke Baadal Cha Gaye

دیدہ و دل کی فضا پر غم کے بادل چھا گئے

دیدہ و دل کی فضا پر غم کے بادل چھا گئے

اس کے جاتے ہی نگاہوں کے افق سنولا گئے

دل تو پتھر بن گیا تھا موم کس نے کر دیا

مدتوں بعد آج کیوں آنکھوں میں آنسو آ گئے

تھی سکوت دل سے پہلے بزم ہستی پر خروش

پھر وہ سناٹا ہوا طاری کہ ہم گھبرا گئے

بے حسی کا سرد موسم زندگی پر چھا گیا

دل میں روشن تھے جو انگارے وہ سب کجلا گئے

روبرو اک اجنبی چہرہ سوالی کی طرح

آئنہ دیکھا تو اے مخمورؔ ہم گھبرا گئے

مخمور سعیدی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(902) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Makhmoor Saeedi, Deeda O Dil Ki Fiza Par Gham Ke Baadal Cha Gaye in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 43 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.3 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Makhmoor Saeedi.