Janib Kocha O Bazaar Nah Dekha Jaye

جانب کوچہ و بازار نہ دیکھا جائے

جانب کوچہ و بازار نہ دیکھا جائے

غور سے شہر کا کردار نہ دیکھا جائے

کھڑکیاں بند کریں چھپ کے گھروں میں بیٹھیں

کیا سماں ہے پس دیوار نہ دیکھا جائے

سرخیاں خون میں ڈوبی ہیں سب اخباروں کی

آج کے دن کوئی اخبار نہ دیکھا جائے

شہر کا شہر گنہ گار تو ہو سکتا ہے

جب کہیں کوئی گنہ گار نہ دیکھا جائے

دشت سے کم نہیں ویراں کوئی بستی مخمورؔ

یہ ہجوم در و دیوار نہ دیکھا جائے

مخمور سعیدی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1186) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Makhmoor Saeedi, Janib Kocha O Bazaar Nah Dekha Jaye in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 43 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.7 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Makhmoor Saeedi.