Luta Diye Hain Kabhi Ju Khazane Dhondte Hain

لٹا دئیے تھے کبھی جو خزانے ڈھونڈھتے ہیں

لٹا دئیے تھے کبھی جو خزانے ڈھونڈھتے ہیں

نئے زمانے میں کچھ دن پرانے ڈھونڈھتے ہیں

کبھی کبھی تو یہ لگتا ہے میں وہ لمحہ ہوں

کہ اک زمانے سے جس کو زمانے ڈھونڈھتے ہیں

کچھ احتیاط بھی اب کے طلب میں رکھنا پڑی

سو اس کو اور کسی کے بہانے ڈھونڈھتے ہیں

لپک کے آتے ہیں سینے کی سمت تیر ایسے

پرند شاخ پہ جیسے ٹھکانے ڈھونڈھتے ہیں

ہماری سادہ مزاجی بھی کیا قیامت ہے

کہ اب قفس ہی میں ہم آشیانے ڈھونڈھتے ہیں

منظور ہاشمی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(965) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Manzoor Hashmi, Luta Diye Hain Kabhi Ju Khazane Dhondte Hain in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 18 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.6 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Manzoor Hashmi.