Moy Sehtay Sehtay Jafa Karian

موے سہتے سہتے جفا کاریاں

موے سہتے سہتے جفا کاریاں

کوئی ہم سے سیکھے وفاداریاں

ہماری تو گزری اسی طور عمر

یہی نالہ کرنا یہی زاریاں

فرشتہ جہاں کام کرتا نہ تھا

مری آہ نے برچھیاں ماریاں

گیا جان سے اک جہاں لے کے شوخ

نہ تجھ سے گئیں یہ دل آزاریاں

کہاں تک یہ تکلیف ما لا یطاق

ہوئیں مدتوں ناز برداریاں

خط و کاکل و زلف و انداز و ناز

ہوئیں دام رہ صد گرفتاریاں

کیا درد و غم نے مجھے ناامید

کہ مجنوں کو یہ ہی تھیں بیماریاں

تری آشنائی سے ہی حد ہوئی

بہت کی تھیں دنیا میں ہم یاریاں

نہ بھائی ہماری تو قدرت نہیں

کھنچیں میرؔ تجھ سے ہی یہ خواریاں

میر تقی میر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(286) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Mir Taqi Mir, Moy Sehtay Sehtay Jafa Karian in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 269 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 5 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Mir Taqi Mir.