Nah Poch Khawab Zulekha Ne Kya Khayal Liya

نہ پوچھ خواب زلیخا نے کیا خیال لیا

نہ پوچھ خواب زلیخا نے کیا خیال لیا

کہ کارواں کا کنعاں کے جی نکال لیا

رہ طلب میں گرے ہوتے سر کے بل ہم بھی

شکستہ پائی نے اپنی ہمیں سنبھال لیا

رہوں ہوں برسوں سے ہم دوش پر کبھو ان نے

لے میں ہاتھ مرا پیار سے نہ ڈال لیا

بتاں کی میرؔ ستم وہ نگاہ ہے جس نے

خدا کے واسطے بھی خلق کا وبال لیا

میر تقی میر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1484) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Mir Taqi Mir, Nah Poch Khawab Zulekha Ne Kya Khayal Liya in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Islamic Urdu Poetry. Also there are 269 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.8 out of 5 stars. Read the Islamic poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Mir Taqi Mir.