Din Bhale Jaisa Kate Sanjh Samey Khawab Tu Dekh

دن بھلے جیسا کٹے سانجھ سمے خواب تو دیکھ

دن بھلے جیسا کٹے سانجھ سمے خواب تو دیکھ

چھوڑ تعبیر کے خدشوں کو ارے خواب تو دیکھ

جھونپڑی میں ہی بنا اپنے خیالوں کا محل

گو پرانا ہے بچھونا تو نئے خواب تو دیکھ

تیرا ہر خواب مسرت کی بشارت لائے

سچ ترے خواب ہوں اللہ کرے خواب تو دیکھ

دل شکستہ میں ہوا جب بھی مرا دل ٹوٹا

حوصلے آگے بڑھے کہنے لگے خواب تو دیکھ

تجھے وہ بات بھی آئے گی سمجھ یار مرے

جو ہے ادراک کی سرحد سے پرے خواب تو دیکھ

گتھیاں ساری سلجھ جائیں کہ ہوں اور سوا

تو ذرا ہاتھ بڑھا تھام سرے خواب تو دیکھ

نیند کے خواب ترے خوف کے گھر ہیں بھی تو کیا

نیند کو چھوڑ تو جب صبح اٹھے خواب تو دیکھ

محمد احمد

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(427) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Mohammad Ahmad, Din Bhale Jaisa Kate Sanjh Samey Khawab Tu Dekh in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 28 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.5 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Mohammad Ahmad.