Or Kiya Zindagi Reh Gayi

اور کیا زندگی رہ گئی

اور کیا زندگی رہ گئی

اک مسلسل کمی رہ گئی

وقت پھر درمیاں آ گیا

بات پھر ان کہی رہ گئی

پاس جنگل کوئی جل گیا

راکھ ہر سو جمی رہ گئی

زر کا ایندھن بنی فکر نو

شاعری ادھ مری رہ گئی

میں نہ رویا نہ کھل کر ہنسا

ہر نفس تشنگی رہ گئی

تم نہ آئے مری زندگی

راہ تکتی ہوئی رہ گئی

پاس دریا دلی رکھ لیا

لاکھ تشنہ لبی رہ گئی

پھر فنا کا پیام آ گیا

ایک امید تھی رہ گئی

آپ احمدؔ کہاں رہ گئے

اور کہاں زندگی رہ گئی

محمد احمد

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(496) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Mohammad Ahmad, Or Kiya Zindagi Reh Gayi in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 28 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.8 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Mohammad Ahmad.