Pas Marg Tamana Kon Dekhe

پس مرگ تمنا کون دیکھے

پس مرگ تمنا کون دیکھے

مرے نقش کف پا کون دیکھے

کوئی دیکھے مری آنکھوں میں آ کر

مگر دریا میں صحرا کون دیکھے

اب اس دشت طلب میں کون آئے

سرابوں کا تماشہ کون دیکھے

اگرچہ دامن دل ہے دریدہ

درون نخل تازہ کون دیکھے

بہت مربوط رہتا ہوں میں سب سے

مری بے ربط دنیا کون دیکھے

شمار اشک شمع بزم ممکن

ہمارا دل پگھلتا کون دیکھے

میں کیا دیکھوں کہ تم آئے ہو ملنے

کھلی آنکھوں سے سپنا کون دیکھے

میں جیسا ہوں میں ویسا تو نہیں ہوں

مگر جیسا ہوں ویسا کون دیکھے

محمد احمد

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(540) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Mohammad Ahmad, Pas Marg Tamana Kon Dekhe in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 28 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 5 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Mohammad Ahmad.