Hum –apnay Zehen Par Pehlay Usay Taari Karain Gay

ہم اپنے ذہن پر پہلے اسے طاری کریں گے

ہم اپنے ذہن پر پہلے اسے طاری کریں گے

پھر اس کے بعد اپنے قلب کو جاری کریں گے

ہم اپنے ظاہر و باطن کا اندازہ لگا لیں

پھر اس کے سامنے جانے کی تیاری کریں گے

محبت ہم سے اس کو ہو گئی تو ٹھیک ورنہ

ہم اپنی ساکھ رکھنے کو اداکاری کریں گے

اب ایسی مفلسی میں کیا کہیں ہو آنا جانا

مگر کب تک ہم اس سے عذر بیماری کریں گے

مرے کس کام کے ہیں اب یہ کوے اور کبوتر

عبث برباد گھر کی چار دیواری کریں گے

بہت اچھا تری قربت میں گزرا آج کا دن

بس اب گھر جائیں گے اور کل کی تیاری کریں گے

یہاں اب لوگ محسنؔ زندگی کرتے کہاں ہیں

ذرا سے دکھ میں روئیں گے عزا داری کریں گے

محسن اسرار

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(794) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Mohsin Asrar, Hum –apnay Zehen Par Pehlay Usay Taari Karain Gay in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 27 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Mohsin Asrar.