Aik Halat Jisse Wehshaat Hi Kahain Ge Shaid

ایک حالت جسے وحشت ہی کہیں گے شاید

ایک حالت جسے وحشت ہی کہیں گے شاید

اُس نے اذہان میں کہرام مچایا ہوا ہے

چُپ کے اظہار کو اظہار سمجھنے والے!

دل ترے ہجر کو آواز میں لایا ہوا ہے

یعنی مقصد تھا فقط خاک اُڑانا ، صاحب!

میں نے صحرا سے مراسم کو بڑھایا ہوا ہے

اک پری زاد ہے دھڑکن کے علاقے میں مقیم

جس نے ماحول کو پُر وجد بنایا ہوا ہے

مبشر سعید

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(405) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Mubashir Saeed, Aik Halat Jisse Wehshaat Hi Kahain Ge Shaid in Urdu. This famous Urdu Shayari is a , and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 57 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.7 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Mubashir Saeed.