Hijar Se Jaan Churana Bhi Mujhe Aata Hai

ہجر سے جان چھڑانا بھی مجھے آتا ہے

ہجر سے جان چھڑانا بھی مجھے آتا ہے

آپ کو دھیان میں لانا بھی مجھے آتا ہے

کیوں نہ یہ عمر ترے ساتھ بِتائی جائے؟

زخم کو چھیلتے جانا بھی مجھے آتا ہے

اپنا ہر خواب سمندر میں روانہ کر کے

آنکھ کو صبر بنانا بھی مجھے آتا ہے

وہ جو اک شخص مرے ذہن پہ چھایا ہے ، اُسے

یاد کرتا ہوں، بھُلانا بھی مجھے آتا ہے

کس لیے ناز ہے سادہ سے ہنر پر تجھ کو؟

کوزہ گر! چاک گھمانا بھی مجھے آتا ہے

مبشر سعید

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(482) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Mubashir Saeed, Hijar Se Jaan Churana Bhi Mujhe Aata Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 57 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.8 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Mubashir Saeed.