Jism Or Rooh K Azaar Barhane Wali

جسم اور روح کے آزار بڑھانے والی

جسم اور روح کے آزار بڑھانے والی

میرے اطراف میں وحشت ہے ڈرانے والی

روز دیتی ہے وہ جینے کی دعائیں مجھ کو

وہ جو اک دوست ہے، وہ دوست پرانے والی

اپنی توقیر بڑھانی ہے، بڑھا لے، لیکن

کوئی تہمت تو لگا، مجھ پہ لگانے والی

تو نے اِس رنگ کی قیمت کو بڑھایا ہوا ہے

اے سیہ رنگ کے ملبوس میں آنے والی!

اپنے احوال کو اشعار میں ڈھالا میں نے

بات چھپتی ہی نہیں مجھ سے چھپانے والی

جیتے رہنے کا ہنر آپ سکھاتی ہے سعید!

ہم میں حائل ہے جو دیوار زمانے والی

مبشر سعید

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(674) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Mubashir Saeed, Jism Or Rooh K Azaar Barhane Wali in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 57 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.6 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Mubashir Saeed.