Mujh Se Yeh Baat Nahi Tum Ne Chupani Pani

مجھ سے یہ بات نہیں تم نے چھپانی،پانی!

مجھ سے یہ بات نہیں تم نے چھپانی،پانی!

کیسی لگتی ہے مری اشک فشانی، پانی!

چودہ صدیوں سبے ترا ذکر چلا آتا ہے

وقت نے بخشی سدا تجھ کو جوانی، پانی!

خیمۂ صبر میں پہنچا نہ بوقتِ مشکل

پانی تب سے ہی ہوا پھرتا ہے، پانی پانی

بیٹھ جاتا ہوں کنارے سے لگا کر تکیہ

رات بھر مجھ کو سناتا ہے، کہانی، پانی

صبر کرنا ہے تو کرتے ہی چلے جانا ہے

پاس رہ کر بھی نہیں پیاس بجھانی،پانی!

سانس کی دھوپ میں ہر وقت ہی جلتے ہوۓ ہونٹ

خشک ہونے کے یہی صاف معانی،پانی!

دشت کے سخت سفر میں تو ہمیشہ ہی سعید

ختم کرتا ہے طبعیت کی گرانی، پانی!

مبشر سعید

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(795) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Mubashir Saeed, Mujh Se Yeh Baat Nahi Tum Ne Chupani Pani in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 57 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.8 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Mubashir Saeed.