Sab K Senoon Main Khuda Ka Hai Thikana Mere Dost

سب کے سینوں میں خدا کا ہے ٹھکانہ، مرے دوست!

سب کے سینوں میں خدا کا ہے ٹھکانہ، مرے دوست!

تم کسی کا بھی کبھی دل نہ دُکھانا، مرے دوست!

یہ پرندوں کے لیے جائے اماں ہوتے ہیں

اپنے آنگن میں درختوں کو لگانا ، مرے دوست!

میں تو وحشت میں یہی کام کِیا کرتا ہوں

وہی کہتے ہیں جسے اشک بہانا، مرے دوست!

یہ نہ ہو تم کو ریاضت کا ثمر ہی نہ ملے

اوّلِ ہجر میں آنسو نہ بہانا، مرے دوست!

دن جو ڈھلتا ہے تو میں رقص رچا لیتا ہوں

شام ہوتے ہی مجھے دیکھنے آنا ، مرے دوست!

لُوٹ لیتی ہے چمکدار دکھائی دے کر

یعنی، دنیا کے کبھی پاس نہ جانا، مرے دوست!

مجھ پہ فتوی جو لگانا ہے لگاؤ، آؤ

میں دیوانہ ہوں دیوانہ ہوں دیوانہ، مرے دوست!

ساری دنیا کے گھرانوں میں مبشر صاحب

سب سے بہتر ہے محمدﷺ کا گھرانہ ، مرے دوست!

مبشر سعید

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(562) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Mubashir Saeed, Sab K Senoon Main Khuda Ka Hai Thikana Mere Dost in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social, Islamic Urdu Poetry. Also there are 57 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.8 out of 5 stars. Read the Social, Islamic poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Mubashir Saeed.