Neend Jholi Main Liye Wasaal Ghari Aati Hai

نیند جھولی میں لئے وصل گھڑی آتی ہے

نیند جھولی میں لئے وصل گھڑی آتی ہے

یعنی خوابوں میں میرے اب بھی کوئی آتی ہے

عشق تو خیر، نہ پہلا تھا نہ دوجا تجھ سے

پھر بھی اے دوست تری یاد بڑی آتی ہے

اس نے یہ کہہ کے ہم ایسوں کی زباں بندی کی

بحث کرنے سے محبت میں کمی آتی ہے

وہ مجھے چھوڑ تو سکتا ہے مگر جانتا ہے

دھوپ میں لی گئی تصویر بری آتی ہے

پہلے ہم دھیان سے چلتے ہیں زمیں پر برسوں

پھر کہیں جا کے یہ بے راہ روی آتی ہے

میں اسے توڑ کے بس جان بچا لوں اپنی؟

وہ روایت جو زمانے سے چلی آتی ہے

اک ترا غم ہے کہ تنہا نہیں ہونے دیتا

اک تری یاد ہے سکھیوں میں گھری آتی ہے

ہائے وہ دن کہ ترے غم سے نہیں تھی فرصت

اب کبھی بیٹھ کے سوچوں تو ہنسی آتی ہے

ممتاز گورمانی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(512) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Mumtaz Gurmani, Neend Jholi Main Liye Wasaal Ghari Aati Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 24 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.5 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Mumtaz Gurmani.