مشہور شاعر منیر نیازی کی شاعری ۔ نظمیں اور غزلیں

دشمنوں کے درمیان شام

منیر نیازی

دشمن کی طرف دوستی کا ہاتھ

منیر نیازی

خوبصورت زندگی کو ہم نے کیسے گزارا

منیر نیازی

ایک میں اور اتنے لاکھوں سلسلوں کے سامنے

منیر نیازی

اپنے گھر کو واپس جاؤ رو رو کر سمجھاتا ہے

منیر نیازی

اشک رواں کی نہر ہے اور ہم ہیں دوستو

منیر نیازی

اتنے خاموش بھی رہا نہ کرو

منیر نیازی

تجھ سے بچھڑ کر کیا ہوں میں اب باہر آ کر دیکھ

منیر نیازی

اگا سبزہ در و دیوار پر آہستہ آہستہ

منیر نیازی

نیل فلک کے اسم میں نقش اسیر کے سبب

منیر نیازی

ساعت ہجراں ہے اب کیسے جہانوں میں رہوں

منیر نیازی

ڈر کے کسی سے چھپ جاتا ہے جیسے سانپ خزانے میں

منیر نیازی

نواح وسعت میداں میں حیرانی بہت ہے

منیر نیازی

نشیب وہم فراز گریز پا کے لیے

منیر نیازی

محفل آرا تھے مگر پھر کم نما ہوتے گئے

منیر نیازی

طوفانی رات میں انتظار

منیر نیازی

شب خوں

منیر نیازی

میں اور بادل

منیر نیازی

دشمنوں کے درمیان

منیر نیازی

ملن کی رات

منیر نیازی

سن بستیوں کا حال جو حد سے گزر گئیں

منیر نیازی

آ گئی یاد شام ڈھلتے ہی

منیر نیازی

اس شہر سنگ دل کو جلا دینا چاہئے

منیر نیازی

میرے دشمن کی موت

منیر نیازی

Records 1 To 24 (Total 130 Records)