Dil Jal Raha Tha Gham Se Magar Naghma Gir Raha

دل جل رہا تھا غم سے مگر نغمہ گر رہا

دل جل رہا تھا غم سے مگر نغمہ گر رہا

جب تک رہا میں ساتھ مرے یہ ہنر رہا

صبح سفر کی رات تھی تارے تھے اور ہوا

سایا سا ایک دیر تلک بام پر رہا

میری صدا ہوا میں بہت دور تک گئی

پر میں بلا رہا تھا جسے بے خبر رہا

گزری ہے کیا مزے سے خیالوں میں زندگی

دوری کا یہ طلسم بڑا کارگر رہا

خوف آسماں کے ساتھ تھا سر پر جھکا ہوا

کوئی ہے بھی یا نہیں ہے یہی دل میں ڈر رہا

اس آخری نظر میں عجب درد تھا منیرؔ

جانے کا اس کے رنج مجھے عمر بھر رہا

منیر نیازی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(741) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Munir Niazi, Dil Jal Raha Tha Gham Se Magar Naghma Gir Raha in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 130 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Munir Niazi.