Nasheeb Vahm Fraz Guraiz Pa Ke Liye

نشیب وہم فراز گریز پا کے لیے

نشیب وہم فراز گریز پا کے لیے

حصار خاک ہے حد پر ہر انتہا کے لیے

وفور نشہ سے رنگت سیاہ سی ہے مری

جلا ہوں میں بھی عجب چشم سرمہ سا کے لیے

ہے ارد گرد گھنا بن ہرے درختوں کا

کھلا ہے در کسی دیوار میں ہوا کے لیے

زمیں ہے مسکن شر آسماں سراب آلود

ہے سارا عہد سزا میں کسی خطا کے لیے

اسیریٔ پس آئینۂ بقا اور تو

نکل کے آ بھی وہاں سے کبھی خدا کے لیے

کھڑا ہوں زیر فلک گنبد صدا میں منیرؔ

کہ جیسے ہاتھ اٹھا ہو کوئی دعا کے لیے

منیر نیازی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1350) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Munir Niazi, Nasheeb Vahm Fraz Guraiz Pa Ke Liye in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 130 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 5 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Munir Niazi.