Dheme Rangoon Ki Dhoop Jaise Hai

دھیمے رنگوں کی دھوپ، جیسی ہے

دھیمے رنگوں کی دھوپ، جیسی ہے

وہ ہنسی، کچی دھوپ جیسی ہے

رنگ آنکھوں کے ہو گئے گہرے

شام بھی، پکی دھوپ جیسی ہے

وہ فقط، عکسِ آبِ آئینہ ہے

یعنی، چمکیلی دھوپ، جیسی ہے

وہ ہے شفاف روشنی جیسا

شخصیت اُس کی دھوپ جیسی ہے

چُپ کے معنی بدل دیے میں نے

میری خاموشی دھوپ جیسی ہے

ایسی حدّت ہے اُس کے لہجے میں!

سر بہ سر جلتی دھوپ جیسی ہے

اب اداسی بھری ہے آنکھوں میں

اب نظر ڈھلتی دھوپ جیسی ہے

وہ، محبت کے رنگ بانٹے گی!

خود جو گہنائی دھوپ جیسی ہے

کٹتی جاتی ہے سانس کی ڈوری

کیا اداسی بھی دھوپ جیسی ہے؟

ناہید ورک

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(930) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Naheed Virk, Dheme Rangoon Ki Dhoop Jaise Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 74 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Naheed Virk.