Tere Jaisa Mujh Ko Bana Diya Tere Ishq Ne

ترے جیسا مجھ کو بنا دیا ترے عشق نے

ترے جیسا مجھ کو بنا دیا ترے عشق نے

‎مجھے خود سے یعنی ملا دیا ترے عشق نے

‎تُو ملا تو روح بھی ، میری، وجد میں آ گئی

‎مجھے رقص کرنا سکھا دیا ترے عشق نے

‎تری قربتیں کسی معجزے سے تو کم نہیں

مجھے رب سے میرے ملا دیا ترے عشق نے

مری روح کا تری روح سے ہے مکالمہ

مجھے زندگی کا پتا دیا ترے عشق نے

‎تجھے پا کے تو مرا روپ رنگ نکھر گیا

‎مجھے کیا حسین بنا دیا ترے عشق نے

‎مرے سامنے یہ تو میں نہیں، کوئی اور ہے

‎مجھے آئینہ بھی نیا دیا ترے عشق نے

‎میں پری تھی، سات سوالوں کی مری شرط تھی

‎مجھے سارا کچھ ہی بُھلا دیا ترے عشق نے

ناہید ورک

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1245) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Naheed Virk, Tere Jaisa Mujh Ko Bana Diya Tere Ishq Ne in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 74 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.6 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Naheed Virk.