Mra Dil Is Liye Dhadka Nahi Hai

مرا دل اس لیے دھڑکا نہیں ہے

مرا دل اس لیے دھڑکا نہیں ہے

پلٹ کر اس نے جو دیکھا نہیں ہے

الٰہی میں کہاں پر آ گئی ہوں

اجالا بھی جہاں اجلا نہیں ہے

یہ آنسو بھی مسافر ہیں جبھی تو

انہیں میں نے کبھی روکا نہیں ہے

وہی اک خواب ہوتا ہے اثاثہ

ہمارے پاس جو ہوتا نہیں ہے

تو کیا اب ظلم حد سے بڑھ گیا ہے

جو کوئی اب تلک رویا نہیں ہے

پلٹنا بھی نہیں شاہینؔ میں نے

اور آگے بھی کوئی رستہ نہیں ہے

نجمہ شاہین کھوسہ

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(569) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Najma Shaheen Khosa, Mra Dil Is Liye Dhadka Nahi Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 39 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.3 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Najma Shaheen Khosa.