Khalaoon Ki Aseeri Main Dua

خلاؤں کی اسیری میں دعا

خداوندا !

میں اک لمحہ تری بے پایاں صدیوں کا

مِری یہ عمر تیرے وقت کی کَترن ہے

نیلا آسماں قرنوں سے تیری نیند کی تقدیس ہے

تُو رات کے دل میں

ستاروں کے ابد روشن کیے بیٹھا ہے

آوازیں تری خاموشیوں کی گنگناہٹ ہیں

تُو نغموں کا سمندر ہے

کراں سے تا کراں پھیلی اداسی کا مداوا ہے

مگر میری زمینوں کے مقدر میں

خلاؤں کی اسیری ہے

انہیں آزاد کر دے

کائناتی فاصلوں کی تیرگی میں

روشنی بھر دے

مجھے لا انتہا کر دے!

نصیر احمد ناصر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(317) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Naseer Ahmed Nasir, Khalaoon Ki Aseeri Main Dua in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Nazam, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 28 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.3 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Naseer Ahmed Nasir.