Main Parindoon Ki Tarhaan Tulu Hona Chahta Hoon

میں پرندوں کی طرح طلوع ہونا چاہتا ہوں

میں جانتا ہوں

میرا سفر ختم ہونے والا ہے

نیند آنکھوں میں پڑاؤ ڈال چکی ہے

اور اندھیرے کی ساکن آواز

کہیں بہت قریب سے سنائی دے رہی ہے

لیکن میں سونا نہیں چاہتا

نظم، کچھ دیر اور میرے ساتھ رہو

مجھ سے باتیں کرو

مجھے تنہا مت چھوڑو

میں اِس رات کی صبح دیکھنا،

اور پرندوں کی طرح

تمھارے ساتھ طلوع ہونا چاہتا ہوں!

نصیر احمد ناصر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(453) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Naseer Ahmed Nasir, Main Parindoon Ki Tarhaan Tulu Hona Chahta Hoon in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Nazam, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 28 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Naseer Ahmed Nasir.