Dasht E Bay Aab Main Jiss Torr Hai Wehshaat Karna

دشتِ بے آب میں جس طور ہے وحشت کرنا

دشتِ بے آب میں جس طور ہے وحشت کرنا

اتنا آساں بھی نہیں ۔۔۔۔۔۔۔۔۔ تم سے محبت کرنا

اس نے سیکھا ہی نہیں، کم پہ قناعت کرنا

رنج بھی کرنا ہے گر دل کو، نہائت کرنا

اُس کی عادت کو یہ اطوار بگاڑیں نہ کہیں

کبھی منت ، تو کبھی اُس کی سماجت کرنا

تیری یہ ذرہ نوازی ہمیں راس آئی نہیں

نہ عنائت کبھی کرنا ، یہ عنائت کرنا

آسماں پاؤں تلے ۔۔۔ جیسے سمٹ آتا ہے

عشق کو آتا ہے ایسی بھی کرامت کرنا

تیرا غم کھاتی پہنتی ہوں، اسے اوڑھتی ہوں

نہ کمی کرنا ، میری یونہی کفالت کرنا

دنیا داری کی کڑی دھوپ نے جھلسا ڈالا

سایہِ عشق ۔۔۔۔۔ مرے دل پہ سکینت کرنا

نسرین سید

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(469) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Nasreen Syed, Dasht E Bay Aab Main Jiss Torr Hai Wehshaat Karna in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 54 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.7 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Nasreen Syed.