Khosha Tujh Ko Tasawar Ki Mere Parwaz Ho Bahu

خوشا تجھ تک تصور کی مرے، پرواز ہے باہوؔ

خوشا تجھ تک تصور کی مرے، پرواز ہے باہوؔ

ترا سُر لحن میں میرے ۔۔۔۔۔۔۔۔ تری آواز ہے باہوؔ

مری راتوں میں تیرے حرف جگنو جگمگاتے ہیں

ترا پیغام ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ میری صبح کا آغاز ہے باہوؔ

مرے مرشد تری نسبت سے میرے حرف کی حرمت

سو میرے دل قلندر کو بھی تجھ پر ناز ہے باہوؔ

عطا کر دے ۔۔۔۔۔ محبت کی ذرا خیرات لفظوں کو

میں کاسہ لیس تیری ۔۔۔۔۔۔۔۔ یہ مرا اعزاز ہے باہوؔ

تری حکمت کی باتوں سے ہوئے تسخیر دل کتنے

دلوں پر حکم رانی ہی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ترا اعجاز ہے باہوؔ

ہے جنگل رقص میں سارا، پرندے گنگناتے ہیں

تری آواز میں ۔۔۔۔۔۔۔ قدرت کا کوئی ساز ہے باہوؔ

ہے کس سے گفتگو تیری، مقدر کیا ملا نسریںؔ

تُو ہے دم ساز باہو کی ۔۔۔۔۔۔ ترا ہم راز ہے باہو

نسرین سید

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(852) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Nasreen Syed, Khosha Tujh Ko Tasawar Ki Mere Parwaz Ho Bahu in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Social, Sufi, Friendship, Hope Urdu Poetry. Also there are 54 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 5 out of 5 stars. Read the Love, Social, Sufi, Friendship, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Nasreen Syed.