Ussi Ne Ju Tha Jevaan Ka Ujala Phonk Dala Hai

اُسی نے، جو تھا جیون کا اُجالا، پھونک ڈالا ہے

اُسی نے، جو تھا جیون کا اُجالا، پھونک ڈالا ہے

پلایا عشق آتش کا وہ پیالہ ۔۔۔۔۔۔۔۔ پھونک ڈالا ہے

جلال ایسا تھا جلوے میں ترے، تن راکھ ہونا تھا

مرے صاحب، اے میرے ذی جلالہ، پھونک ڈالا ہے

اسے معلوم تھا، لہجے کی تلخی ، ہے فنا میری

سو اس نے لفظ انگارے میں ڈھالا، پھونک ڈالا ہے

بچی ہے راکھ ہی باقی تعارف میں ۔۔۔۔۔۔ محبت کا

الاؤ تھا مرا پہلے حوالہ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ پھونک ڈالا ہے

دہکتا ہے ترا ہر لمس اب ۔۔۔۔۔۔ انگار کی صورت

ترا بوسہ ، ہوا ماتھے کا چھالا ، پھونک ڈالا ہے

زمانے بھر کی تلخی ڈال دی اس نے پیالے میں

بھرا یوں آگ سے ساغر، اُچھالا، پھونک ڈالا ہے

ہمیں تو رزق ہونا تھا ۔۔۔۔۔ وصالِ روح پرور کا

بنایا ہجر نے ایسے نوالہ ۔۔۔۔۔۔۔ پھونک ڈالا ہے

مبارک ہو تجھے نسریںؔ ، مسیحائی مسیحا کی

کیا ہر اک ستم کا یوں ازالہ ، پھونک ڈالا ہے

نسرین سید

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(403) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Nasreen Syed, Ussi Ne Ju Tha Jevaan Ka Ujala Phonk Dala Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 54 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 5 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Nasreen Syed.